منقبت: خواجۂ ہندالولی کو سنیوں کی جان لکھ

نتیجۂ فکر: محمد جیش خان نوری امجدی مہراجگنج

شاہ  بطحا شاہ خوباں کا انھیں احسان لکھ
حضرت ابن علی  کو  دہر کا سلطان لکھ

ہیں  عطائے  مصطفی اور دین پر قربان لکھ
خواجۂ  ہندالولی  کو  سنیوں کی جان لکھ

آگرہ کے دل کی دھڑکن جانِ راجستھان لکھ
عاشق خواجہ انہیں  تو  فخرِ ہندوستان لکھ

ان کی آمد سے ہوا روشن یہاں دیں کا چراغ
ہند پہ  خواجہ  پیا کا  ہے حسیں فیضان لکھ

جب وہابی تجھ  سے پوچھے کیا عقیدہ ہے ترا
بول اس سے عاشق چشتی ہوں یہ پہچان لکھ

ان کے در سے ہو رہے ہیں آج بھی سب فیضیاب
اس لئے جودو سخا کی شان لکھ ہاں شان لکھ

جس کے دل میں ہے نہیں الفت معین الدین کی
اس کے حق میں بندہء شیطان لکھ شیطان لکھ

منقبت    کے   ہوگئے   اشعار   اے   نوری   رقم
یہ ترا کچھ بھی نہیں خواجہ کا ہے فیضان لکھ

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نعت رسول: طائرِ مدینہ تو! لے کے دردِ دل جاتا

مرشدی تاج الشریعہ علیہ الرحمہ کے ایک مصرع پر طبع آزمائی کی کوشش نتیجۂ فکر: …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے