نعت رسول: ہم میں ہو جائے اگر ذوق عبادت آباد

نتیجۂ فکر: سید اولاد رسول قدسی مصباحی
نیویارک امریکہ

جس کے دل میں ہے شہ دیں کی محبت آباد
مستقل اس میں رہی رب کی عنایت آباد

جس کے روحانی عزائم ہوں بلند و بالا
کیوں نہ ہو اس میں لطافت ہی لطافت آباد

ہو میسر ہمیں سرمایۂ تسلیم و رضا
ہم میں ہو جائے اگر ذوق عبادت آباد

باپ اصلاح اس انساں کے لیے ہے مسدود
جس کی سوچوں میں ازل سے ہے شقاوت آباد

پارا پارا ہوا شیرازۂ غم پل بھر میں
ان کے دربار میں ایسی ملی راحت آباد

ان کی پر نور زباں کا ہے یہ فیضان کرم
سنگ دل میں بھی ہوا درِّ ہدایت آباد

جو نہ رکھتا ہو شریعت کے تقاضوں کا بھرم
غیر ممکن ہے کہ اس میں ہو طریقت آباد

تلخ تر فکر و نظر بھی ہوئی سرشار ان پر
ان کے ارشاد میں ایسی تھی حلاوت آباد

سرنگوں ہوگۓ عالم کے محاسن قدسیؔ
رب نے یوں ان میں کیا نور ملاحت آباد

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نعت رسول: طائرِ مدینہ تو! لے کے دردِ دل جاتا

مرشدی تاج الشریعہ علیہ الرحمہ کے ایک مصرع پر طبع آزمائی کی کوشش نتیجۂ فکر: …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے