نعت رسول: ہو لب پر میرے بس نغمہ نبی کا

نتیجۂ فکر: محمد جیش خان نوری امجدی

ہو لب پر میرے بس نغمہ نبی کا
یہی ہے ماحصل اس  زندگی کا

نہ ہو مقصود شاہ دیں کی مدحت
نتیجہ  کیا  ہے  ورنہ  شاعری  کا

نہیں  ڈرتا  وہ شیطان لعیں سے
گلے میں پٹہ ہے جس کے علی کا

جہاں  جانے  کی  ہے سب کی تمنا
مدینے  میں  ہے  وہ روضہ نبی کا

بٹھا لوں ماں کو میں پلکوں پہ پھر بھی
نہ  ہوگا   حق   ادا    اس   زندگی    کا

جہاں  جاؤگے  پاؤگے  انہیں   کو
ہے   ایسا   رتبہ   میرے  ازہری کا

برستی ہے وہاں رحمت کی بارش
جہاں پر روضہ ہے ہندالولی کا

یہ شہر طیبہ ہے سن لے اے نوری
نہیں  چلتا  یہاں  سکہ کسی کا

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نعت رسول: طائرِ مدینہ تو! لے کے دردِ دل جاتا

مرشدی تاج الشریعہ علیہ الرحمہ کے ایک مصرع پر طبع آزمائی کی کوشش نتیجۂ فکر: …

One comment

  1. صل اللہ علیہ وسلم

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے