نعت رسول: ان کے در سے بتاؤ کیا نہ ملا

نتیجۂ فکر: سید اولاد رسول قدسی مصباحی
نیویارک امریکہ

ان کے در سے بتاؤ کیا نہ ملا
جو نہ تم کو ملا وہ نا نہ ملا

ہو کے مربوط ان کے دامن سے
یہ نہ کہنا مجھے خدا نہ ملا

جو چلا ان کی راہ سے کٹ کر
زیست میں اس کو ارتقا نہ ملا

جس کا دل ان کی سمت ہے مائل
دور رہ کر بھی وہ جدا نہ ملا

ان کی رحمت بھری زباں کے سوا
اور کہیں بھی "انا لها” نه ملا

ہم نے دیکھے بہت برے لیکن
ان کے گستاخ سا برا نہ ملا

گرد طیبہ کی طرح دنیا میں
پھر کہیں سرمۂ شفا نہ ملا

لوٹ کر رشک خلد طیبہ سے
زندگی میں کوئی مزه نہ ملا

رہ کے پیہم نبی کی یادوں میں
قدسیؔ ذوق نمو تھکا نہ ملا

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نعت : مرے مصطفے ہیں زمانے سے پہلے

رشحات قلم : شمس الحق علیمی مہراج گنج ادب سے رہو طیبہ آنے سے پہلےشہِ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے