نعت رسول: یثرب کی پھر سرزمیں دارالشفاء ہو گئی

نتیجۂ فکر: شمس الحق علیمی، مہراج گنج

جس کی زباں پر رواں ان کی ثنا ہو گئی
اس شخص کی زندگی غم سے رہا ہو گئی

بولے ولادت کی شب جن و بشر جھوم کر
وہ آج آئے خوشی کی انتہا ہو گئی

‏پیارے نبی ہو گئے جلوہ نما جب وہاں
یثرب کی پھر سرزمیں دار الشفا ہو گئی

تو بھیج دے اب عمر سا اک خلیفہ خدا
ظلم و ستم کی جہاں میں انتہا ہو گئی

وہ پیر زن جو سدا ہجرت کو مجبور تھی
رحمت کی اک ہی نظر سے پارسا ہو گئی

مشکل میں مولا علی کو جب پُکارا کبھی
تو دور سر سے مرے ہر اک بلا ہو گئی

شمسی بھی آتا کبھی دیدار کو اے خدا
چشمِ کرم شاہِ دیں کی گر عطا ہوگئ

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نعت رسول: طائرِ مدینہ تو! لے کے دردِ دل جاتا

مرشدی تاج الشریعہ علیہ الرحمہ کے ایک مصرع پر طبع آزمائی کی کوشش نتیجۂ فکر: …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے