کڑاکے کی سردی میں37 ویں روز بھی جاری رہی کسانوں کی تحریک، بھجن کرکے دی ایک دوسرے کو نئے سال کی مبارک باد

ہماری آواز دہلی
نئی دہلی یکم جنوری(اسٹاف رپورٹر)زرعی اصلاحات قوانین کے خلاف دہلی کی سرحد پر کسان تنظیموں کی تحریک جمعہ کو 37 ویں روز بھی جاری رہی کسانوں نے نئے سال کے موقع پر کیرتن بھجن کیا اور ایک دوسرے کو نئے سال کی مبارک باد دی پنجاب راجستھان اور متعدد دیگر ریاستوں سے کسانوں کے نئے نئے جتھے قومی راجدھانی کی سرحدوں پر پہنچنے لگے ہیں۔ کسان تنظیموں کے لوگ ٹریکٹر ٹرالی سے آرہے ہیں۔ وہ اپنے ساتھ کھانے پینے کی اشیاء بھی لارہے ہیں۔ نئے جتھوں میں نوجوانوں کے علاوہ خواتین اور بچے بھی ہیں۔
کسان تنظیموں کے لیڈران نے کہا کہ زرعی اصلاحات قوانین کی واپسی تک ان کی تحریک جاری رہے گی۔ کڑاکے کی سردی کا ان پر کوئی اثر نہیں ہے اور وہ اپنے مطالبات کو پورا ہونے تک دھرنا اورمظاہرہ کے لئے پرعزم ہیں۔
کسانوں کی تحریک کی حمایت دینے کے لیے غیرممالک سے بھی کچھ لوگ آئے ہیں۔ ان میں کئی فن کار ہیں۔ جو وہاں کسانوں کو تفریح فراہم کررہے ہیں اور ان کی حوصلہ افزائئی کررہے ہیں۔
حکومت اور کسان تنظیموں کے مابین چارجنوری کو اگلے دور کی بات چیت ہونے والی ہے۔ حکومت اور کسان تنظیموں کے درمیان دومعاملات پر اتفاق ہوا ہے، جن میں بجلی بل اور سبسڈی جاری رکھنا اور پرالی جلانے والے کسانوں کے خلاف کارروائی نہ کرنا اہم ہے۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں نعیم الدین فیضی برکاتی

محمد نعیم الدین فیضی برکاتی ہماری آواز کے اعزازی ایڈیٹر اور سینیئر صحافی ہیں۔ موصوف ایم۔پی۔ کے ضلع کٹنی میں واقع دارالعلوم برکات غریب نواز کے پرنسپل اور ایک اچھے قلم کار ہیں۔ رابطہ نمبر: 09792642810 (ادارہ)

یہ بھی پڑھیں

بڑھتی ہوئی گستاخیوں کے خلاف تحریک فروغِ اسلام رمضان کی اکیس تاریخ کو ملک گیر سطح پر جیل بھرو مہم کا آغاز کرے گی: قمر غنی عثمانی

پیغمبرِ اسلام ﷺ کی شان میں منصوبہ بند گستاخیوں کے سدِّ باب اور گستاخوں کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے