نعت رسول: خدا نے اس قدر ان کو بنایا افضل و ارفع

نتیجۂ فکر: عبدالمبین فیضی، مہراج گنج

خدا نے اس قدر ان کو بنایا افضل و ارفع
نہ آیا دہر میں کوئی بھی ان سا افضل و ارفع

گلِ لالہ، گلِ ریحاں، چنبیلی، مشک و عنبر سے
ہے ان کے جسمِ اطہر کا پسینہ افضل و ارفع

سنور جائےگا اس میں خود تمہارا ظاہر و باطن
ہے ان کے اسوۂ اقدس کا شیشہ افضل و ارفع

قسم اللہ! کی اس بات پر ایمان ہے میرا
تمامی خلق سے ہیں میرے آقا افضل و ارفع

مسیحاؤں کےبھی آقامسیحا کیوں نہ ٹھہریں جب
ہے ان کے پائے اقدس کا غُسالہ افضل و ارفع

کِھلا کرتے ہیں اس میں مدحتِ آقا کے گل بوٹے
ہے حد درجہ! مرے دل کا حدیقہ افضل و ارفع

کسی بھی میکدے کی سمت میں ہرگز نہیں تکتا
پِیا! جب سے تری الفت کا بَادَہ افضل و ارفع

یہی پہچان ہے میری! یہ دیکھومیری گردن میں
غلامیّٔ محمدﷺ کا ہے پٹہ افضل و ارفع

سرِ عرشِ عُلیٰ بھی خم ہے اس کے سامنے فیضی
ہے اس درجہ! شہِ والا کا روضہ افضل و ارفع

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پکار: اس بار خاموشی کہے گی

میراروڈ: نظمیں، اشعار، غزلیں، کہانیاں وغیرہ ہماری زندگی میں ایک اہم کردار ادا کرتی ہیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے