بقایاجات کو لے کر دہلی کے میئروں کا غیر معینہ مدت کے لیے بھوک ہڑتال شروع

نئی دہلی: ہماری آواز 17 دسمبر (پریس ریلیز) دہلی کے تین میئروں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کی رہائش گاہ کے باہر بیٹھ کر میونسپل کارپوریشن کو 13 ہزار کروڑ روپے کے بقایاجات کی ادائیگی کا مطالبہ کرتے ہوئے جمعرات کو غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال شروع کردی۔
شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر جئے پرکاش ، جنوبی میونسپل کارپوریشن کی میئر انامیکا میتھلیش سنگھ ، مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر نرمل جین سخت سردی کے باوجود 7 دسمبر سے وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر بیٹھے ہیں۔
شمالی دہلی کارپوریشن کے میئر جئے پرکاش نے کہا کہ آج سے غیر معینہ مدت تک بھوک ہڑتال شروع ہوگئی ہے۔
اکتوبر میں بھی تینوں میئروں نے واجبات کی ادائیگی کا مطالبہ کرتے ہوئے وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر دھرنا دیاتھا۔
اہم بات یہ ہے کہ فنڈز کی کمی اور ملازمین کو اجرت کی عدم ادائیگی کے سبب متعدد بار ملازمین ہڑتال پر بھی جا چکے ہیں۔ کارپوریشن کے میئروں کا الزام ہے کہ کیجریوال حکومت واجبات کی ادائیگی نہیں کررہی ہے ، جس نے کارپوریشنوں کی مالی صورتحال کو مزید خراب کردیا ہے۔
مسٹر جئے پرکاش نے الزام عائد کیا کہ لاکھوں کارپوریٹرز کورونا دور میں صفائی ستھرائی کے کاموں میں مصروف ہیں جبکہ دہلی حکومت ان کے پیسہ روک کر بیٹھی ہے۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

بڑھتی ہوئی گستاخیوں کے خلاف تحریک فروغِ اسلام رمضان کی اکیس تاریخ کو ملک گیر سطح پر جیل بھرو مہم کا آغاز کرے گی: قمر غنی عثمانی

پیغمبرِ اسلام ﷺ کی شان میں منصوبہ بند گستاخیوں کے سدِّ باب اور گستاخوں کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے