جمعیت علماء روتہٹ حلقہ نمبر 2 کی میٹنگ اور ممبر سازی کے لیے ایک کمیٹی کی تشکیل

روتہٹ/ نیپال: ہماری آواز (انوارالحق قاسمی)17 دسمبر

"جمیعت علماءنیپال” ایک محبوب ومقبول دینی وملی ادارہ ہے،جو مسلمانوں کے دینی وملی مسائل کو حل کرنے میں شب وروز کوشاں ہے،اس کی ضلعی اور ملکی میٹنگ کے اعلان پر عوام الناس کاایک بڑی تعداد میں جمع ہونااس کے مقبول ومحبوب ہونے کی روشن دلیل ہے۔     آج بتاریخ 16/دسمبر بروز بدھ بعد نمازِ ظہر جمعیت علماء ضلع روتہٹ کے حلقہ نمبر (2 )کی میٹنگ  موضع "مٹھیا”میں  "ممبر سازی مہم” کے عنوان پر  ہوئی،جس کی صدارت حضرت اقدس مولانا محمد شوکت صاحب قاسمی- زیدمجدہ- نے فرمائی۔اس میٹنگ میں اہلِ علم وذمے دارنِ جمیعت کے علاوہ عامة الناس کی ایک بڑی تعداد نے نہایت جوش وخروش کے ساتھ  شرکت کی،اورمیٹنگ کو معنی خیز واثرآفریں بنانے میں اپنا اہم کردار پیش کیا۔    اس میٹنگ میں نظامت کافریضہ ملک نیپال کےجید عالم دین اور عبقری شخصیت حضرت مولانا محمد اسلم جمالی صاحب قاسمی زیدمجدہ نے بحسن وخوبی انجام دیا،  حضرت مولانا مفتی محمد ناصر صاحب قاسمی نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا، اور محبت واحترام کے حسین جذبات کے ساتھ مہمانوں کااستقبال کیا،اور کہا:کہ ہم بےحد ممنون و مشکور ہیں آپ تمام مہمانان عظام کا کہ آپ نے اپنی تمام تر مصروفیات کوبالائے طاق رکھ کر،جمعیت کی ایک آواز پرحاضر ہوئےہیں،اهلا وسهلا مرحبا .خوش آمدید، خوش آمدید۔      پھر باضابطہ مجلس کاآغاز نیپال کےمشہورقاری(جنہیں اہل علم  ثانی سدیس کہتے ہیں )حضرت مولانا قاری اسرارالحق صاحب قاسمی صاحب (ناظم تعلیمات :جامعہ عربیہ دارالعوام جینگڑیا،ونائب ناظم :معہد ام حبیبہ )کی تلاوت قرآن سے ہوا۔   اور متصلا ہی آل نیپال شاعر محترم جناب فیاض فیضی صاحب نے شان رسالت میں نذرانہ عقیدت پیش کیا ۔    تلاوت قرآن کریم اور نعت النبی کے بعد میٹنگ اپنےمقصد کی طرف گامزن ہوگئی۔    چناں چہ جمعیت علماء نیپال کے سکریٹری اور بےمثال عالم دین حضرت اقدس مولانا قاری محمد حنیف عالم صاحب قاسمی، مدنی  نے جمعیت علماء نیپال کی مختصر خدمات پرروشنی ڈالتے ہوئے فرمایا:کہ جمعیت ملک نیپال کی قومی، ملی ،سماجی تنظیم ہے،اور واضح رہے کہ یہ کوئی سیاسی تنظیم نہیں ہے؛مگر سیاست سے پیچھے بھی نہیں ہے، اورگفتگو کوبرقرار رکھتے ہوئے حضرت نے فرمایا :کہ لوگ کہتے ہیں :کہ جمعیت کام کرتی ہے یانہیں،اس کاہمیں کوئی پتہ نہیں، تو حضرت نے اس قول و اعتراض کےجواب میں کہا کہ جمعیت خوب کام کررہی ہے،اس میں کوئی دورائے نہیں ہے ؛البتہ "جمعیت علماء نیپال "سیاسی تنظیموں کی طرح نہیں ہے، کہ یہ بھی اپنی خدمات سے عوام کوباخبر کرنے کےلیے ہنگامہ آرائی  اورتوڑ پھوڑ کرے؛کیوں کہ یہ سب ہماری تنظیم کےلیے شرعاوعقلا نامناسب ہے۔   ہماری تنظیم تو قرآن و احادیث  کی روشنی میں اور سلف صالحین کے بتائےہوئے طریقوں کے مطابق بہت عمدہ کارنامہ انجام دےرہی ہے اور- انشاءاللہ العزیز -دیتی رہےگی۔      حضرت نے دوران گفتگو کہا: کہ "جمعیت علماء نیپال” لاک ڈاؤن کےزمانہ میں بھی غریب ومحتاج علماء کرام کی ہرممکن تعاون کی ہے،حضرت نے  اور بھی متعدد خدمات پرروشنی ڈال کر اپنی بات ختم کی ۔     جمعیت علماء نیپال کے مرکزی ممبر اور ہردل عزیز عالم دین  حضرت اقدس مولانا محمد عزرائیل صاحب مظاہری نے کہا:کہ یہ ہم مسلمانوں کے لیے بہت ہی افسوس ناک بات ہے کہ ملک نیپال میں ہماری ایک بڑی تعداد ہے ،پھر بھی ہماری تنظیم کے پاس نہ اب تک کوئی اپنا مکان ہے اور نہ ہی  کوئی اپنی زمین ہے،بس اب تک یہ کرایہ ہی پر چل رہی ہے۔    اس لیےاب ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اول وہلہ میں "کاٹھمانڈو "میں جمعیت کےلیے  زمین خریدیں پھر اس پر عمارت بنائیں ،اور یہ دونوں کام آپ حضرات کے تعاون  کے بغیر ناممکن ہے۔   اس لیے اس  کے لیے ہرمسلمان دل کھول کر جمعیت کی مددکریں تاکہ جمعیت کےپاس اپنی زمین اور اپنامکان ہوجائے؛کیوں کہ کسی بھی تنظیم کی ترقی میں ان دونوں چیزوں  کانمایاں کردار رہتاہے۔   مکھیاسلیم اللہ صاحب نے کہاکہ یہ میٹنگ اسی وقت کامیاب سمجھی جائے گی، جب ہم مسلمانوں میں کاہرایک اس کاممبر بن جائیں گے  اور ہمیں اسی وقت معلوم ہوگا کہ مسلمان جمعیت کےساتھ ہیں، جب  مسلمان اپناقومی،ملی فریضہ سمجھ کر اس کاممبر خود بھی بنیں،اپنےگھروالوں،دوست واحباب کوبھی ممبر  بنوائیں گے۔    اور بھی دیگرشرکاء  مثلا:حضرت مولانا محمد طیب صاحبِ، حضرت انجینئر عبد الجبار صاحب ،مولانا محمد اسلم جمالی صاحب قاسمی،حضرت مولانا درخشید انور صاحب، قاری شہاب الدین صاحب،حضرت مولانا جوادعالم صاحب، حضرت مولانا معین الدین صاحب،ڈاکٹر ومولانا انعام الحق صاحب نےاپنے قیمتی مشوروں سے سامعین کونوازا۔     اور پھر حلقہ نمبر (2 )میں مسلمانوں کو جمعیت کاممبر بنانے کے لیےایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے،جو تقریبا 21/ افراد پر مشتمل ہیں ۔   جن کےاسماء گرامی مندرجہ ذیل ہیں :   (1 )ڈاکٹر انعام الحق صاحب صدر اعلی (2)مولانا جمشید صاحب نائب صدر  (3)مولاناانیس الرحمان صاحب ندوی سکریٹری (4 )ماسٹر شفیق صاحب نائب سکریٹری (5 )تجمل خان صاحب (6 )انتظار خان صاحب (7)ماسٹر امام الحق صاحب (8)عبدالحی صاحب (9 )منصور عالم صاحب (10)افضل حسین صاحب (11)ابواللیث صاحب (12)قاری عبدالاحد صاحب (13)استخار صاحب (14)حاجی فیروز صاحب (15)ذاکر حسین صاحب (16)ظہیر صاحب (17 )حاجی عزیز صاحب (18)معیدصاحب (19)حضرت مولانا محمد ارشد صاحب (20)نورالاسلام صاحب (21 )ڈاکٹر فرہدصاحب۔  اور پھر دعاپر مجلس کااختتام ہوا۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

کیا بائیکاٹ ہر مسئلے کا حل ہے؟

از قلم: ابو ارسلان یزدانی پیش جو مسائل ہوں گفتگو سے حل کر لوفیصلہ نہیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے