اکابر اولیاے کرام کی دینی خدمات وطریقۂ دعوت ہمارے لیے مشعل راہ: مفتی ظفر احمد قاسمی

فرخ آباد: ہماری آواز ( یاسر عبدالقیوم قاسمی)
جمعیت علماء فرخ آباد کے زیراہتمام ضلع بھر میں جاری عظمت اولیاء عشرے کے تحت منعقد چھٹے جلسے میں جمعیت علماء اترپردیش (وسط) کے جنرل سکریٹری و ضلعی صدر مفتی ظفر احمد قاسمی نے خصوصی خطاب کیا۔
بعد نماز مغرب مولانا راشد ثاقبی کی زیر صدارت منعقدہ جلسے میں دوران خطاب مفتی ظفر احمد قاسمی نے کہا برصغیر میں اکابر اولیاء و خاصان خدا کی دینی خدمات و قربانیاں ہمارے لئے مشعل راہ ہیں، بزرگوں نے صنم کدۂ ہند میں کفر و شرک کی تاریکیوں کے درمیان توحید و سنت کے چراغ روشن کیے، برسوں سے قومی عائلی، لسانی عصبیت  کی بنیاد پر مظالم جھیل رہی انسانیت کی دادرسی کی، احساس کمتری کے شکار ستم رسیدہ افراد کو خود اعتمادی کی بلند چوٹیوں پر لا کھڑا کیا، اور  ستمگروں، ظالموں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بے باکی و ہمت کے ساتھ حق بات کہنے کا انہیں وہ جذبہ عطا کیا کہ جس کو دنیا نے دیکھا،اسلامی تعلیمات ونبوی ہدایات کے روشنی میں پیغام امن و محبت سناتے ہوئے ایسے اخلاق پیش کیے کہ جس سے متأثر ہوکر لوگ جوق درجوق حلقہ بگوش اسلام ہوتے چلے گئے ،وقت کا تقاضہ ہے کہ پھر وہی اخلاق و کردار  دنیائے انسانیت کے سامنے پیش کیے جائیں، خدمت خلق کے جذبات سے سرشار ہوکر بلاامتیاز مظلوموں، بیواؤں، یتیموں ،کمزوروں و بے سہارا افراد کی فریاد رسی کی جائے، انسانیت کی بنیاد پر انہیں مساویانہ حقوق دلائے جائیں، وسطی ریاست کے نائب صدر مولانا عبد الرب قاسمی نے اولیاء کی کرامات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کرامت اللہ تعالیٰ کی طرف سے کسی خاص بندے کے اکرام میں اس کے ہاتھ پر خارق عادت عمل کے صادر ہوجانے کا نام ہے، مولانا نے کہا عصر حاضر میں بزرگوں کے ذریعے بظاہر  کرامات کے صادر نہ ہونے سے لوگوں نے سمجھ لیا کہ اب دنیا میں اولیاء موجود نہیں یا اولیاء اللہ پیدا نہیں ہوتے، جب کہ حقیقت یہ ہے کہ اس دور میں کرامت کا کم ہوجانا ہمارے لئے خیر کی بات ہے ورنہ ایمان کی کمزوری کے سبب اس دور میں ایک بڑا طبقہ صاحب کرامت کے تئیں گمراہی کا شکار ہو جاتا، مولانا نے کہا کرامت دو طرح کی ہیں، ایک کرامت حسی دوسری معنوی، خیرالقرون میں معنوی کرامات کے ساتھ حسی کرامات کا ظہور بھی ہوتا تھا، اور اب صرف کرامت معنوی کا ظہور ہوتا ہے، یہی اصل کرامت ہے، انہوں نے کہا کرامت معنوی یہ ہے کہ بندۂ خدا حب جاہ، حب دنیا ،حب مال سے کنارہ کش ہوجائے، جلسے کا آغاز حافظ حنظلہ کی تلاوت قرآن پاک سے ہوا، نعتیہ اشعار عرباض متعلم مدرسہ دارالسلام نے پیش کیے، نظامت مولانا محمد اسامہ قاسمی نے کی، حافظ مصاحب علی بحیثیت سرپرست موجود رہے، منتظمین حافظ سلمان ،حافظ طیب،مولوی زبیر ، حافظ عمران وغیرہ نے اظہار تشکر کیا دعاء پر جلسہ ختم ہوا۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

رئیس التحریر حضرت علامہ یٰس اختر مصباحی صاحب کا جامعہ احسن البرکات مارہرہ شریف میں طلبۂ جامعہ سے فکری اور آفاقی خطاب

مارہرہ شریف: 26مارچ، ہماری آواز(ضیاءالرحمن امجدی) جامعہ احسن البرکات خانقاہ برکاتیہ بڑی سرکار مارہرہ شریف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے