ای۔وی۔ایم۔ معاملہ: کانگریس لیڈروں کودھچکا، سبھی درخواستیں خارج

ہماری آواز نینی تال، 8 دسمبر (پریس ریلیز) اتراکھنڈ ہائی کورٹ نے الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایم) میں گڑبڑی کے معاملے میں منگل کے روز کانگریس پارٹی اور اس کے لیڈروں کو ایک بڑا دھچکا دیاعدالت نے کانگریس لیڈروں کی طرف سے دائر تمام درخواستوں کو خارج کردیا جسٹس لوک پال سنگھ کی عدالت میں کانگریس کے سابق کابینی وزیر نوپربھات سمیت پانچ لیڈروں کی جانب سے دائر عرضیوں کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے 14 اکتوبر کو کیس میں حتمی سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ آج اس معاملے میں عدالت نے حتمی فیصلہ جاری کردیا اور کہا گیا کہ ای وی ایم میں گڑبڑی کے سلسلے میں مقدمے کا سبب پیدا نہیں ہوا ہے اور انتخابی عرضیوں کی عوامی نمائندگی ایکٹ کے تحت تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔
عدالت کے فیصلے سے واضح ہے کہ ای وی ایم میں گڑبڑی نہیں ہوئی ہے۔ اسی بنیاد پر عدالت نے تمام درخواستیں خارج کردی ہیں۔ ہائی کورٹ کے اس فیصلے نے ان لیڈروں کے منہ پر تالے بھی لگا دیئے ہیں جو اکثر ای وی ایم میں گڑبڑی کی بات کرتے ہیں۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

ہمارےبارے میں ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانبدارانہ نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے